’مسجد الحرام کے اندر گارڈ نے میری بہن کے ساتھ یہ انتہائی شرمناک ترین حرکت کی کہ۔۔۔‘ خاتون نے ایسی بات کہہ دی کہ جان کر ہر مسلمان کانوں کو ہاتھ لگانے پر مجبور ہوجائے

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)اللہ کے گھر میں حاضری کی سعادت نصیب ہو تو بد سے بدترین انسان کا دل بھی گناہ سے متنفر ہو جاتا ہے، مگر افسوس کہ شیطان کی پیروی میں کچھ لوگوں کے دل ایسے پتھر ہو جاتے ہیں کہ مقدس ترین مقام پر بھی انہیں احساس گناہ نہیں ہوتا۔ برطانوی نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے ایک خاتون نے ایک ایسے ہی بدکار شخص کے متعلق بتایا ہے کہ جس نے مسجد الحرام کے صحن میں اس خاتون کی بہن کو جنسی طور پر ہراساں کیا۔

اینگی انگونی نامی خاتون نے افسوسناک واقعے کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا ”میں 2010ءمیں حج کے لئے گئی تھی جب یہ واقعہ پیش آیا۔ مسجد الحرام کے باہر ایک مارکیٹ میں مجھے جنسی طور پر ہراساں کیا گیا۔ یہ دیکھ کر مجھے شدید دھچکا لگا۔ میں اپنی والدہ سے محض دو میٹر کے فاصلے پر تھی اور اتنی خوفزدہ تھی کہ چیخ بھی نہیں پارہی تھی۔ اسی طرح مسجد کے صحن میں میری بہن کو ایک گارڈ نے ہراساں کیا۔ میں نے اس گارڈ سے چلا کر کہا ’تم یہ کیا کررہے ہو؟ تمہیں کوئی حق نہیں پہنچتا کہ میری بہن کو چھوﺅ۔ پولیس کا کام لوگوں کو تحفظ دینا ہے۔‘ جب میں اس پر چلارہی تھی تو وہ ہنس رہا تھا۔ میں چاہتی ہوں کہ سب کو اس بات کی خبر ہو تاکہ ہر کوئی محتاط رہے۔“

رپورٹ کے مطابق دیگر کئی خواتین نے بھی سوشل میڈیا پر اسی طرح کے واقعات بیان کئے ہیں۔ اس نوعیت کی خبروں کے متعلق لندن میں واقع سعودی سفارتخانے کا کہنا تھا کہ مملکت ہراساں کئے جانے کے واقعات کے متعلق اطلاعات کو بہت سنجیدگی سے لیتی ہے اور پولیس و سکیورٹی فورسز کی جانب سے ایسے تمام واقعات کی مکمل تحقیقات کی جاتی ہیں تاکہ ذمہ داران کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جا سکے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *